صفحات

منگل، 15 اگست، 2006

گردن کٹی اور پاکستان آزاد ہو گیا

لاہور میں جشن آزادی کے موقع پر تین سالہ بچی کے گلے پر ڈور پھیر کر آزادی کے متوالوں نے چودہ اگست کی آزادی کا بھر پور جشن منایا۔
اسلامیہ پارک کی رہائیشی دادا ، دادی کے ہمراہ ایک تین سالہ بچی خدیجہ موٹر سائیکل پر سیر کے لئے جب علامہ اقبال روڑ پر پہنچے تو ایک کٹی پتنگ کی ڈور نے خدیجہ کی شہہ رگ کاٹ دی۔خدیجہ کو فوری طور پر شالامار ہستپال لے جایا گیا مگر وہ جانبر نہ ہو سکی۔
ایک اطلاع کےمطابق پولیس نے ایک پتنگ باز کو گرفتار کر لیا ہے۔مگر لاہور میں دوسرے پتنگ بازوں کے نعرے اب بھی چھتوں پر گونج رہے ہیں۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں